امریکی ڈرون حملہ سے افغان امن عمل پر کاری ضرب لگی ہے:ملیحہ لودھی

اقوام متحدہ:پاکستان نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے کہا ہے کہ امریکہ کے پاکستانی علاقہ میں ڈرون حملہ سے، جس میں طالبان سربراہ ملا اختر محمد منصور ہلاک ہوئے، افغان امن عمل کو زبردست دھکا پہنچا ہے ۔ اور اس ڈرون حملہ نے صورت حال اور بھی پیچیدہ کردی۔
اقوام متحدہ میں پاکستان کی سفیر ملیحہ لودھی نے افغانستان کی صورت حال پر مباحثہ میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ ہمارے علاقہ میں امریکی ڈرون حملہ پاکستان کے اقتدار اعلیٰ اور علاقائی یکجہتی کی خلاف ورزی کے ساتھ ساتھ اقوام متحدہ کے چارٹر کے اصولوں اور بین الاقوامی قانون کی بھی صریح خلاف ورزی ہے۔
پاکستانی سفیر نے کہا کہ یہ ناقابل قبول کارروائی ہے اور اس سے افغانستان کی صورت حال بہتر ہونے یا سدھرنے کے بجائے اور خراب ہی ہوگی۔لودھی نے مزید کہا کہ ڈرون حملں سے کئی سنگین سوالات جنم لیتے ہیں کہ کیا بین الاقوامی برادری افغانستان میں امن کے بجائے جنگ میں سرمایہ جھونکنے کے لیے تیار ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ گذشتہ15سال سے طاقت کا استعمال لاحاصل رہا اور اس سے کوئی امن قائم نہیں کیا جاسکا۔