شیعہ نوحہ خواں فرحان علی وارث قاتلانہ حملہ میں بال بال بچے

کراچی: معروف قوال امجد صابری کے قتل کے چند گھنٹے بعد مشہور شیعہ نوحہ خواں فرحان علی وارث پر بھی ناکام قاتلانہ ہوا لیکن وہ اس میں بال بال بچ گئے۔ڈان نیوز سے بات کرتے ہوئے وارث نے کہا کہ کراچی کے تین ہٹی علاقہ میں کچھ نامعلوم افراد نے ان کی کار کو گھیر لیا۔
وہ مجھ پر گولی چلانے ہی والے تھے کہ میرے باڈی گارڈ نے ان پر فائر نگ کر کے انہیں فرار ہونے پر مجبور کر دیا۔انہوںنے کہااگرچہ وہ اس وقت کار میں نہیں تھے لیکن جس طرح میری کار کو گھیرا گیا اس سے یہ لگتا ہے کہ ان کا خیال تھا کہ میں کار کے اندر ہوں۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ امجد صابری کے قتل کے بعد جعفریہ ڈزاسٹر سیل نے انہیں ایک سیکورٹی گارڈ مہیا کیا تھا۔علاقہ کے ایس ایچ او نے کہا کہ ہم نے علاقہ کی تلاشی لی اور وارث کی کار پر گولی مارے جانے کی کوئی شہادت نہیں ملی۔ فرحان اور امجد ٹی وی پر اکثر ایک ساتھ صوفی کلام اور نعتوں کا پروگرام پیش کیا کرتے تھے۔