کلبھوشن جادھو کیس: عالمی عدالت میں پاکستان کی جانب سے سابق چیف جسٹس جیلانی ایڈہاک جج مقرر

اسلام آباد:(یواین آئی) حکومت نے سابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ریٹائرڈ تصدق حسین جیلا نی کو ہندوستانی ایجنٹ کلبھوشن جا دھوکیس میں عالمی عدالت انصاف میں بطور ایڈہاک جج مقرر کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔
ذرائع کے مطابق محکمہ قانون کی جانب سے ایڈ ہاک جج کی تقرری کے لیے جو فہرست وزیراعظم کو ارسال کی گئی اس میں دو نام تجویز کیے گئے جن میں جسٹس ریٹائرڈ تصدق حسین جیلانی اور سینئر وکیل مخدوم علی خان کا نام شامل تھا۔ حکومت نے فوج سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز سے مشورے کے بعد تصدق جیلانی کو مقرر کرنے کا فیصلہ کیا۔
وفاقی حکومت رواں ماہ میں ہی عالمی عدالت کو ایڈہاک جج مقرر کرنے کے اپنے اس فیصلے سے مطلعکردے گی۔ عالمی عدالت انصاف میں ایسا انتظام ہے کہ اگر کسی ملک کا کوئی معاملہ وہاں آتا ہے اور اس ملک کا کوئی جج وہاں مقرر نہیں ہے تو وہ ملک اپنا ایڈہاک جج مقرر کرسکتا ہے۔حال میں عالمی عدالت میں پاکستان کا کوئی جج نہیں ہے۔
جبکہ ہندوستان کی جانب سےعالمی عدالت میں جسٹس دلویر بھنڈاری جج ہیں۔عالمی عدالت میں ایڈہاک جج مستقل جج کے مساوی ہی تسلیم کیےجاتے ہیں۔

Title: kulbhushan jhadav case pakistan designates ad hoc judge at icj | In Category: پاکستان  ( pakistan )